Qasida Burda Sharif in Urdu Lyrics- Qasida Burda Sharif in Urdu Download

مزید کہانی جاننے کے لیے اس مضمون کو مکمل پڑھیں جس میں Qasida Burda Sharif in Urdu Lyrics کا قصہ تفصیل سے بتایا گیا ہے…..

Qasida Burda Sharif in Urdu Lyrics

Qasida Burda Sharif in Urdu Lyrics

مَوْلايَ صَلِّ وَسَلِّـمْ دَائِمـاً أَبـَـدًا
عَلى حَبِيْبِـكَ خَيْــرِ الْخَلْقِ كُلِّهِـمِ

مُحَمَّدٌ سَـيِّدُ الْكَــوْنَيْنِ وَالثَّقَلَـيْنِ
وَالْفَرِيْقَـيْنِ مِنْ عُـرْبٍ وَّمِنْ عَجَـمِ

أَمِنْ تَـذَكُّرِ جِيْرَانٍم بِـذِيْ سَـلَمِ
مَزَجْتَ دَمْعـاً جَرٰى مِنْ مُّقْلَةٍم بِدَمِ

أَمْ هَبَّـتِ الرِّيْحُ مِنْ تِلْقَآءِ كَاظِمَـةٍ
وَأَوْمَضَ الْبَرْقُ فِي الظَّلْماءِ مِنْ إِضَمِ

فَمَا لِعَيْنَيْكَ إنْ قُلْتَ اكْفُفَا هَمَتَــا
وَمَا لِقَلْبِكَ إنْ قُلْتَ اسْتَفِقْ يَهِـمِ

أيَحْسَـبُ الصَّبُّ أنَّ الْحُبَّ مُنْكَتِـمٌ
مَا بَيْنَ مُنْسَــجِمٍ مِّنْهُ وَمُضْطَـرِمِ

لَوْلاَ الْهَوٰى لَمْ تُرِقْ دَمْعاً عَلىٰ طَلِلِ
وَلاَ أَرِقْتَ لِـذِكْرِ الْبَـانِ وَالْعَلَـمِ

فَكَيْفَ تُنْكِـرُ حُبًّام بَعْدَمَا شَـهِدَتْ
بِهِ عَلَيْـكَ عُدُوْلُ الدَّمْعِ وَالسَّـقَمِ

وَأَثْبَتَ الْوَجْدُ خَطَّيْ عَبْرَةٍ وَّضَـنًى
مِّثْلَ الْبَهَـارِ عَلىٰ خَدَّيْكَ وَالْعَنَـمِ

نَعَمْ سَرٰى طَيْفُ مَنْ أَهْوٰى فَـأَرَّقَنِي
وَالْحُبُّ يَعْتَـرِضُ اللَّـذَّاتِ بِالأَلَـمِ

يَا لائِمِيْ فِي الْهَوٰى الْعُذْرِيِّ مَعْذِرَةً
مِّنِّي إِلَيْكَ وَلَوْ أنْصَفْـتَ لَمْ تَلُـمِ

عَدَتْكَ حَالِيْ لاَ سِـرِّي بِمُسْـتَتِرٍ
عَنِ الْوُشَـاةِ وَلاَ دَائِي بِمُنْحَسِـمِ

مَحَّضْتَنِي النُّصْحَ لكِنْ لَسْتُ أسْمَعُهُ
إِنَّ الْمُحِبَّ عَنِ الْعُذَّالِ فِيْ صَمَمِ

اِنِّي اتَّهَمْتُ نَصِيْحَ الشَّيْبِ فِيْ عَذَلٍ
وَالشَّيْبُ أَبْعَدُ فِيْ نُصْحٍ عَنِ التُّهَمِ

يَـا أَكْرَمَ الْخَلْقِ مَا لِي مَنْ أَلُوْذُ بِه
سِـوَاكَ عِنْـدَ حُلُوْلِ الْحَادِثِ الْعَمَمِ

وَلَنْ يَّضِيْقَ رَسُـوْلَ اللهِ جَاهُكَ بِيْ
إِذَا الْكَرِيْمُ تَجَلَّى بِــاسْمِ مُنْتَقِـمِ

فَإِنَّ مِنْ جُوْدِكَ الدُّنْيَا وَضَرَّتَهَا
وَمِنْ عُلُوْمِكَ عِلْمُ اللَّوْحِ وَالْقَلَمِ

يَا نَفْـسُ لا تَقْنَطِي مِنْ زَلَّةٍ عَظُمَتْ
إِِنَّ الْكَبَـائِرَ فِي الْغُفْرَانِ كَـاللَّمَـمِ

لَعَـلَّ رَحْمَةَ رَبِّيْ حِيْنَ يَقْسِــمُهَا
تَأْتِيْ عَلى حَسَبِ الْعِصْياَنِ فِي الْقِسَمِ

يَا رَبِّ وَاجْعَلْ رَجَائِيْ غَيْرَ مُنْعَكِسٍ
لَدَيْـكَ وَاجْعَلْ حِسَابِيْ غَيْرَ مُنْخَرِمِ

وَالْطُفْ بِعَبْدِكَ فِي الدَّارَيْنِ إِِنَّ لَـهُ
صَبْراً مَّتٰى تَـدْعُهُ الأَهْـوَالُ يَنْهَزِمِ

وَائْذَنْ لِّسُحْبِ صَلاةٍ مِّنْكَ دَائِمَةٍ
عَـلَى النَّبِيِّ بِمُنْهَــلٍّ وَّمُنْسَـجِمِ

وَالآلِ وَالصَّحْبِ ثُمَّ التَّابِعِيْنَ فَهُـمْ
أَهْلُ التُّقٰى وَالنُّقٰى وَالْحِلْمِ وَالْكَـرَمِ

ثُمَّ الرِّضَـا عَنْ أَبِيْ بَكْرٍ وَّعَنْ عُمَرَ
وَعَنْ عَلِيٍّ وَّعَنْ عُثْمَـانَ ذِي الْكَرَمِ

مَا رَنَّحَتْ عَذَبَاتِ الْبَانِ رِيْحُ صَبَـا
وَأَطْرَبَ الْعِيْسَ حَادِي الْعِيْسِ بِالنَّغَمِ

فَاغْفِرْ لِنَاشِدِها وَاغْفِرْ لِقَارِئِهَا
سَاَلْتُكَ الْخَيْرَ يَا ذَا الْجُوْدِ وَالْكَرَمِ

يَا رَبِّ بِالْمُصْطَفی بَالِّغْ مَقَاصِدَنَا
وَاغْفِرْلَنَا مَامَضی يَا وَاسِعَ الْکَرَمِ

Qasida Burda Sharif in Urdu Download

Qasida Burda Sharif Writer Name

قصیدہ البردہ یا جیسا کہ ہم اسے مختصراً البردہ بھی جانتے ہیں۔ تیرہویں صدی میں مصر کے نامور صوفی صوفی امام البصیری کی تحریر کردہ، یہ اسلامی پیغمبر محمد کی تعریف کی علامت ہے۔

اس نظم کی مرکزی شکل، جس کا اصل عنوان الکواقب الدوریہ فی مدی خیر الباریہ ہے، سنی مسلم دنیا میں بڑے پیمانے پر جانا جاتا ہے۔

Qaseeda Burda Shareef Full Mp3 Download
Qasida Burda Sharif Lyrics by Mehmood Ul Hassan

مولائے صلى الله عليه وسلم

ابدان الا حبیبی کا خیرل خلقی کلحیمی

محمدن سیدالکاونینی وثقلین

والفاریقین من اربع ومن عجمی

نبیوں والا امیرون نہی فلا احدون

ابرار فی قوالی لا من ہوا نعمی۔

ھوال حبیب اللہ الذی ترجا شفاء اتھو

لَکُلْ حَوْ لِمَنْ اَوَلِی مُقْتَمِیْ

سبھ طیبہ میں ہووے بات تو ہے بارہ نور کا۔

صدقہ لینے نور کا آیا ہے تارا نور کا۔

باغ طیبہ میں سوہانہ پھول پھول نور کا۔

مست بو ہے بلبلین پارٹی ہیں کلمہ نور کا۔

بارھویں کے چاند کا مجرا ہے سجدہ نور کا۔

بارہ برجوں سے جھکا ایک ستارہ نور کا۔

تیرے ہی ماں راہ اے جان سہارا نور کا۔

بخت جاگا نور کا چمک ستارہ نور کا۔

میں گدا تو بادشاہ بھر دے پیالہ نور کا۔

نور دین دنیا تیرا دے دال صدقہ نور کا۔

تاج والے دیکھ کر تیرا امامہ نور کا۔

سر جھکا تے ہے اللہ بول بالا نور کا۔

چاند جھُک جاتا جِدھر اُنگلے اُتاتے مہد میں۔

کیا ہی چلتا ہے اس پر کھلونا نور کا۔

تیری نسل پاک میں ہے بچہ بچہ نور کا۔

تو ہے عین نور تیرا سب گھرانہ نور کا۔

اے رضا یہ احمد نوری کا فیض یہ نور ہے

ہو گئی میری غزل بد کر قصیدہ نور کا;

مولا یَا صَلَّی اللہُ تَعَالٰی عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّمَ دائمی آبادان

علی حبیبی کا خیرل خلقی کل لحیمی

Qaseeda Burda Shareef by Junaid Jamshed Mp3 Free Download

Qasida Burda Sharif Tarjuma Ke Sath

Qaseeda Burda Shareef Background Music

Qaseeda Burda Shareef by Junaid Jamshed Youtube

Qaseeda Burda Shareef Benefits

قصیدہ بردہ شریف کے چند خواص اور فوائد…

  1. اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ کی لمبی عمر ہو تو آپ کو زندگی میں 1001 بار پڑھنا اور برکات کرنا ہوگی۔
  2. اگر آپ اپنی زندگی سے مشکلات کو دور کرنا چاہتے ہیں تو آپ کو 71 مرتبہ پڑھنا ہوگا۔
  3. اگر آپ اپنی زندگی میں دولت سے نوازنا چاہتے ہیں تو آپ کو 70 مرتبہ پڑھنا ہوگا۔
  4. اگر آپ مطمئن رہنا چاہتے ہیں اور روزمرہ کی مشکلات سے دور رہنا چاہتے ہیں تو آپ کو روزانہ ایک بار جاپ کرنا ہوگا۔
  5. اگر آپ اپنے گھر میں اولاد کی نعمت حاصل کرنا چاہتے ہیں تو 116 مرتبہ پڑھیں۔
  6. آپ اسے دن میں ایک بار پڑھ سکتے ہیں اور اپنے گھر کے بچوں کی حفاظت اور لمبی عمر کے لیے ان پر حملہ کر سکتے ہیں۔
  7. جس گھر میں یہ مبارک قصیدہ پڑھا جائے وہ ہر وقت درج ذیل مصیبتوں سے محفوظ رہتا ہے:
    • جین
    • طاعون
    • وباء
    • چکن پاکس
    • آنکھوں کی بیماریوں
    • اچانک موت
    • بدقسمت۔
  8. اگر آپ اپنی زندگی میں قرض سے چھٹکارا حاصل کرنا چاہتے ہیں تو آپ کو یہ ایک بار ضرور پڑھیں۔
  9. اگر آپ ہر روز محفوظ طریقے سے گھر پہنچنا اور واپس آنا چاہتے ہیں، تو آپ کو سفر کے دوران ایسا کرنا چاہیے۔
  10. اگر آپ کی زندگی میں شدید پریشانیاں ہیں اور آپ ان کو دور کرنا چاہتے ہیں تو آپ 3 دن کے روزے رکھیں، اور روزانہ 21 مرتبہ قصیدہ پڑھیں۔
  11. یہ خیال کیا جاتا ہے کہ ایک باقاعدہ تلاوت کرنے والے کو محبوب ترین صلی اللہ علیہ وسلم کی زیارت نصیب ہوتی ہے، انشاء اللہ۔

قصیدہ بردہ شریف پڑھنے کے اور بھی بہت سے فائدے ہیں، جس مقصد کے لیے پڑھا جائے وہ ان شاء اللہ پورا ہو جاتا ہے۔

جس طرح تمام اعمال میں نیت درست ہونی چاہیے، کھانا حلال ہونا چاہیے، کمائی حلال ہونی چاہیے، باطن اور ظاہری انسان پاکیزہ ہونا چاہیے، اسی طرح کم کھائیں، کم سوئیں اور کم بولیں، آپ کی زندگی برسوں تک خوشگوار گزرے گی۔ اور سال.

Qaseeda Burda Shareef Story

اگر پرانے زمانے کو مان لیا جائے تو کہا جاتا ہے کہ یہ قصیدہ امام بصیری نے سخت فتنے کی حالت میں لکھا تھا، جب وہ ایک دن بیدار ہوئے اور خود کو جزوی طور پر مفلوج پایا اور تمام ماہرین ان کا علاج کرنے میں ناکام رہے۔ .

فالج سے پہلے وہ قاہرہ کے مشہور شاعر تھے۔ وہ اپنے معاشرے کے امیر اور طاقتور لوگوں کی طرف سے بڑے پیمانے پر پہچانا جاتا تھا۔ تاہم، اس کی حیثیت کی وجہ سے، وہ شخص جس کے علم اور فن نے اسے شاعروں کے شہزادے کے رتبے تک پہنچایا تھا، ایک باطل شخصیت میں تبدیل ہو گیا۔

اس دوران انہوں نے نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی مسلسل حمد و ثنا کے لیے اس یقین کے ساتھ نعت لکھی کہ انسانیت کی نجات اللہ کے حضور ان کی سخاوت اور شفقت کو پکارنے میں مضمر ہے۔

یہ بھی کہا جاتا ہے کہ ایک رات اس اوڈ کا ورد کرتے ہوئے خالق سے شفاعت کی حالت میں روتے ہوئے، دعائیں مانگتے اور مغفرت کی دعا کرتے ہوئے سو گئے اور کچھ معجزہ ہوا۔

امام کو دیا گیا (جس نے قصیدہ منظور کیا) اور امام کے جسم کے مفلوج حصے پر اپنا پردہ (چادر/چادر) ڈال دیا۔ اگلی صبح، امام البصیری نے خود کو مکمل طور پر صحت یاب کر لیا اور قیاس مکمل ہو گیا، جسے بعد میں قصیدہ بردہ کے نام سے جانا گیا۔

Qasida Burda Sharif in Written Form
Pin by Imran Malik on Naat.......... | Islamic phrases, Islamic quotes quran, Islamic messages

اگر آپ کو اردو غزل میں قصیدہ بردہ شریف پسند ہے تو اس حمد کے بول اپنے چاہنے والوں کے ساتھ ضرور شیئر کریں اور ساتھ گا کر کمنٹ کریں کہ آپ کو اس حمد کی کون سی لائن سب سے زیادہ پسند آئی۔

اگر آپ چاہتے ہیں کہ ہم آپ کی پسند کے کسی بھجن کے بول یہاں شائع کریں، تو آپ نیچے دیئے گئے کمنٹ باکس میں اپنی رائے دے سکتے ہیں۔

Questions & Answer:
Hai Apna Dil to Awara Lyrics Hindi

Hai Apna Dil to Awara Lyrics Hindi – Hemant Kumar Download

Shyama Aan Baso Vrindavan Mein Lyrics in Hindi

श्यामा आन बसो वृंदावन में Lyrics in Hindi – Tripti Download

Ye Tune Kya Kiya Lyrics in English

Ye Tune Kya Kiya Lyrics in English & Translation, Download, Javed

Author :
Lyricbrary is a song library where you can find any songs lyrics and read them and sing them out loud.
Questions Answered: (0)

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *